امجد صابری کا قتل کراچی آپریشن پر ایک سوالیہ نشان ہے۔ علی حسین نقوی

جس شہر میں چیف جسٹس کا بیٹا محفوظ نہیں تو وھاں عام عوام کیسے محفوظ ھوسکتی ہے۔
سید علی حسین نقوی سیکرٹری سیاسیات مجلس وحدت مسلمین نے امجد صابری کے قتل پر اپنے تعزیتی بیان میں کہا ہے کہ سندھ حکومت نے کراچی آپریشن کے نام پر اربوں روپے جھونک دیے مگر نتائج حاصل کرنے میں بری طرح ناکام رہی۔انہوں نے کہا کہ جس آپریشن کا کپتان اپنی ٹیم منتخب کرنے کا اختیار نہ رکھتا ھو وہ آپریشن کو کس طرح منطقی انجام تک پہنچا سکتا ہے۔ شہر قائد کو اجرتی قاتلوں اور شدت پسند مزہبی تنظیم کے غنڈوں نے یر غمال بنا رکھا ہے۔ جب تک اداروں اور حکومت میں موجود ذمہ داران اپنی آنکھوں سے تعصب کی عینک نہیں اتاریں گے اسوقت تک کراچی آپریشن سے مثبت نتائج حاصل نہیں کیئے جاسکتے۔
علی حسین نقوی نے کہا کہ کراچی میں کالعدم مذہبی تنظیم کے دھشتگرد کھلے عام دندناتے پھرتے ھیں جب کہ قانون کا اطلاق صرف امن پسند مظلوم عوام پر ھورھا ھے۔ کراچی میں چیف جسٹس کے بیٹے کو دن دھاڑے اغوا کرلیا جاتا ہے مگر دو دن گزرجانے کے باوجود کوئ سراغ نہیں ملتا اگر یہ نا اہلی نہیں تو اور کیا ہے۔
علی حسین نقوی نےامجد صابری کی شہادت پر انکے اہل خانہ سے تعزیت کا اظہار کیا اور کہا کہ امجد صابری پاکستان کا ایک اثاثہ تھے امجد صابری کا قتل پاکستان کے مایہ ناز فنکار فن ثقافت اور اقدار کا قتل ھے۔
علی حسین نقوی نے سندھ حکومت سے مطالبہ کیا کہ ذمہ داران کو فی الفور گرفتار کیا جائے اور کالعدم مذھبی شدت پسند تنظیموں کے خلاف بھرپور کاروائ کرکے انہیں کیفرکردار تک پہنچایا جائے۔

About وائس آف مسلم

Voice of Muslim is committed to provide news of all sort in muslim world.

ایک تبصرہ

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

Read Next

ăn dặm kiểu NhậtResponsive WordPress Themenhà cấp 4 nông thônthời trang trẻ emgiày cao gótshop giày nữdownload wordpress pluginsmẫu biệt thự đẹpepichouseáo sơ mi nữhouse beautiful