امریکہ کی طرف سے پھر طالبان کی ’’منت‘‘

واشنگٹن: امریکہ نے پاکستان اور افغانستان پر زور دیا ہے کہ دہشت گردوں کی پناہ گاہیں سرحد کے دونوں طرف موجود ہیں،دونوں ملک دہشت گردی پر قابوپانے کیلئے مل کر کام کرنے کا سلسلہ جاری رکھیں او رطالبان بھی تشدد کا راستہ ترک کرکے مذاکراتی عمل کو آگے بڑھائیں تو یہاں پائیدار امن قائم ہو۔

یہ بات محکمہ خارجہ کے ترجمان جان کربی نے روزانہ کی میڈیا بریفنگ کے دوران کہی جس میں انہوں نے بتایا کہ امریکی وزیرخارجہ جان کیری نے ٹیلی فون پر افغان صدر اشرف غنی سے رابطہ کرکے تازہ صورتحال پر تبادلہ خیال کیا ہے۔

یہ رابطہ ایسے وقت میں ہوا ہے کہ افغان صدر نے پہلی بار اپنے پیشرو حامد کرزئی کا لب و لہجہ اختیار کرتے ہوئے پاکستان پر روایتی الزام تراشی کرتے ہوئے دعویٰ کیا ہے کہ پاکستان میں دہشت گردوں کی پناہ گاہیں موجود ہیں جہاں سے افغانستان میں کارروائیاں کی جاتی ہیں۔

امریکی ترجمان کا کہنا تھا کہ امریکہ پاکستان او رافغانستان سمیت پورے خطے میں پائیدارامن چاہتا ہے،اور ہم مستحکم ،محفوظ اور خوشحال خطہ کے لئے پاکستان افغانستان اور دیگر حلیفوں کے ساتھ ہیں۔

انتہاپسند اور تشدد پسند عناصر کو شکست دینے کے لئے افغانستان او رپاکستان مل کر کام جاری رکھیں۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ حالیہ حملوں سے معلوم ہوتا ہے کہ طالبان نے تشدد کا راستہ ترک نہیں کیا،اور افغانستان آج بھی خطرناک علاقہ ہے،ہم سیاسی مفاہمت چاہتے ہیں اور افغانستان کو مستحکم اور خوشحال دیکھنے کے خواہاں ہیں۔

ترجمان نے کہا کہ طالبان کے اندر جو کچھ ہورہا ہے اس کے بارے میں کچھ کہنا بہت مشکل ہے،ہم یہاں امن چاہتے ہیں، چند ہفتے قبل طالبان کی مذاکرات میں شرکت سے ہماری حوصلہ افزائی ہوئی تھی او رہم طالبان پر زور دیتے ہیں کہ وہ تشدد کا راستہ ترک کر دیں اور مفاہمت و مذاکرات کے ذریعے اس امن کے عمل کو آگے بڑھانے میں ساتھ دیں۔

اشرف غنی سے جان کیری کی بات چیت کے بارے میں ترجمان جان کربی کا کہنا تھا کہ ان سے دہشت گردوں کے ٹھکانوں او ردیگر امو رپر تفصیلی بات چیت ہوئی ہے یہ کام آسان نہیں اس کے لئے دونوں ملکوں کو مل کر کام کرنا ہوگا۔

جب ان سے پوچھا گیا کہ پاکستانی قیادت سے بھی کوئی رابطہ ہوا ہے تو ترجمان نے کہا کہ اس کے حوالہ سے انکے پاس کوئی اطلاع نہیں تاہم رات گئے افغان صدر سے بات چیت ہوئی ہے۔

ایک اور سوال پر ترجما ن نے کہا کہ دہشت گردوں کی پناہ گاہیں دونوں طرف موجو دہیں،اور ان کے خاتمے کے لئے انٹیلی جنس اطلاعات کے تبادلے کے ساتھ مل کر کام کرناضروری ہے۔

About وائس آف مسلم

Voice of Muslim is committed to provide news of all sort in muslim world.

ایک تبصرہ

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

Read Next

ăn dặm kiểu NhậtResponsive WordPress Themenhà cấp 4 nông thônthời trang trẻ emgiày cao gótshop giày nữdownload wordpress pluginsmẫu biệt thự đẹpepichouseáo sơ mi nữhouse beautiful