تحریک انصاف کا سونامی لاہور سے ٹکرا گیا، عمران خان نے 11 نکات پیش کر دیئے

پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے گریٹر اقبال پارک لاہور میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے اپنا 11 نکاتی ایجنڈا پیش کردیا۔ ان کا کہنا تھا کہ پی ٹی آئی کے 11نکات دو نہیں، ایک پاکستان بنائیں گے، ملک میں تعلیم، صحت، انصاف اور روزگار کے مواقع فراہم کریں گے۔ چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان نے مینار پاکستان جلسے سے خطاب کرتے ہوئے اپنی پارٹی کی طرف سے 11 نکات پیش کیے۔ ان کا کہنا تھا کہ پی ٹی آئی ان 11 نقات پر عملدرآمد کرتے ہوئے ملک میں بڑی تبدیلی لائے گی، ملک میں تعلیم، صحت، انصاف، کرپشن کا خاتمہ، روزگار کی فراہمی اور ماحولیاتی آلودگی پر قابو پایا جائے گا۔ عمران خان کا کہنا تھاکہ پاکستان کو ایک اسلامی فلاحی ریاست بننا تھا، بدقسمتی سے نااہل حکمرانوں کی ناقص پالیسیوں کے باعث ملک پر بیرونی قرضوں کا بوجھ بڑھتا گیا، ان وجوہات کے باعث گذشتہ 5 سال میں پاکستان کا قرضہ دو گنا ہوگیا ہے۔

پی ٹی آئی کے سربراہ نے شہباز شریف پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ گذشتہ 10 سال سے اقتدار میں رہنے کے باوجود ان کی طرف سے پنجاب بھر میں ایک بھی انٹرنیشنل معیار کی یونیورسٹی اورہسپتال نہیں بنایا جا سکا، پنجاب کا آدھا بجٹ لاہور پر خرچ کر دیا جاتا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ شریف خاندان نے ملک بھر میں ایک بھی ایسا ہسپتال نہیں بنایا، جہاں ان کا اپنا علاج ہو سکے۔ عمران خان کا مزید کہنا تھا کہ وہ اقتدار میں آکر انسانوں پر پیسہ خرچ کریں گے، شہریوں کو مفت اور معیاری تعلیم ہر صورت فراہم کی جائے گی، تعلیم کے حوالے سے ملک بھر میں ایک نصاب متعارف کرایا جائے گا، جہاں غریبوں اور امیروں کے بچے ایک ساتھ تعلیم حاصل کریں گے جبکہ نئے پاکستان میں خواتین کی تعلیم پر خصوصی توجہ دی جائے گی۔ ان کا کہنا تھا کہ وہ پنجاب پولیس کو ٹھیک کرکےدکھائیں گے، میرٹ کو یقینی بناتے ہوئے پنجاب کی پولیس کوغیرسیاسی کر دیا جائے گا۔ جبکہ عدالتی نظام کوتیز رفتار بنایا جائے گا۔ عدالتی کیس کا ایک سال کےاندر فیصلہ ہوا کرے گا۔

اس موقعے پر سربراہ پی ٹی آئی کا یہ بھی کہنا تھا کہ وہ ملک میں سیاحت کو فروغ دیں گے۔ دوسری جانب جنوبی پنجاب کو انتظامی بنیادوں پر الگ صوبہ اورفاٹا کو کے پی کے میں ضم کرنے کا بھی پلان دیا۔ کپتان کا کہنا تھا کہ خواتین کو بااختیار بنایا جائے گا ان کو جائیداد میں سے حصہ دینے کیلئے خصوصی اقدامات کئےجائیں گے۔ انہوں نے کہاکہ موجودہ پاکستان قائدؒ اور اقبالؒ کا پاکستان نہیں، قائداعظمؒ ایسا پاکستان چاہتے تھے جس میں سب کو حقوق حاصل ہوں، قائداعظم کی سوچ تھی کہ پاکستان میں سب برابر کے شہری ہوں گے، مقروض ملک آزادی کھو بیٹھتا ہے، قرضہ دینے والا ملک آپ کو حکم دیتا ہے، فتح کیے بغیر وہ ملک آپ کو غلام بنا دیتا ہے، ہمارے نبی حضرت محمد صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم دنیا کے عظیم لیڈر تھے جنہوں نے مدینہ میں دنیا کی پہلی فلاحی ریاست بنائی تھی،حضرت محمد صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا تھا کہ قانون سب کیلئے سب برابر ہوں گے، مدینہ کی ریاست کی وجہ سے مسلمان دنیا کی عظیم قوم بنے اور 700 سال تک دنیا کی سپر پاور رہے، جب طاقتور غریب کے لیے الگ قانون ہو تو قومیں برباد ہو جاتی ہیں، نبی پاکﷺ مدینہ کی ریاست میں میرٹ کا نظام لےکر آئے۔

انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کی حکومت آئی تو ملک میں تعلیم، انصاف، ٹیکس کا بہترین نظام متعارف کروائیں گے، پاکستان کا قرضہ گزشتہ 60 سالوں میں 6 ہزار تھا، 1990 تک پاکستان برصغیر میں سب سے تیزی سے ترقی کر رہا تھا، 60 سال کی تاریخ پر 6000 ارب روپے قرض تھا، 2008 سے 2013 تک پاکستان کا قرضہ 13 ہزار ارب تھا، پھر(ن) لیگ کی حکومت آئی تو یہ قرضہ 27 ہزار ارب تک جا پہنچا، ہم تباہی کی طرف جا رہے ہیں، ہم قرضے واپس کرنے کے لیے قرضے لے رہے ہیں، ہمارے پاس یہ قرضے دینے کے لئے پیسے نہیں ہیں، جس کا نتیجہ یہ ہوگا کہ ملک میں مہنگائی بڑھے گی، ملک میں پہلے ہی غربت ہے تو ہم نئے ٹیکسز کیسے دیں گے؟۔

ان کا کہنا تھا کہ سب سے پہلے ہم تعلیم کے اوپر کام کریں گے، دنیا میں کوئی ملک ترقی نہیں کر سکا جس نے تعلیم پر زور نہیں دیا، سارے ایشین ٹائیگرز نے اپنے بچوں کو تعلیم دیکر ترقی حاصل کی ،پاکستان میں 8 لاکھ بچے انگلش میڈیم سکولوں میں ہیں جبکہ سوا تین کروڑ سرکاری سکولوں میں پڑھتے ہیں جبکہ 25 لاکھ بچے مدارس میں پڑھ رہے ہیں، جرمنی اور جاپان کی حکومتوں نے عالمی جنگ دوئم کے بعد انسانوں پر وسائل خرچ کئے، حکومت میں آنے کے بعد وہ یکساں تعلیمی نصاب متعارف کروائیں گے۔ دوسرا نکتے کے حوالے سے ان کا کہنا تھا انصاف کا نظام لائیں گے جس میں ہر کسی کو برابری کے حقوق ملیں گے، کے پی میں چیف جسٹس کے ساتھ مل کر فیصلہ کیا ہے کہ سول کیس ایک سال سے زیادہ نہیں جائے گا، کے پی میں ریٹائرڈ جج، فوجی اور بیوروکریٹ بیٹھ کر فوری فیصلے کرتے ہیں وہی نظام پورے پاکستان میں لائیں گے،میرٹ لے کر آئیں گے اور پولیس میں اصلاحات لائیں گے اور پولیس کو غیرسیاسی کریں گے اور ایک دن لوگ کہیں گے کہ پنجاب پولیس زندہ باد۔

About A. H

ایک تبصرہ

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

Read Next

ăn dặm kiểu NhậtResponsive WordPress Themenhà cấp 4 nông thônthời trang trẻ emgiày cao gótshop giày nữdownload wordpress pluginsmẫu biệt thự đẹpepichouseáo sơ mi nữhouse beautiful