تمباکو نوشی سے سالانہ 70 لاکھ افراد کی ہلاکت

وائس آف مسلم ( ویب ڈیسک ) عالمی ادارہ صحت (ڈبلیوایچ او) نے کہا ہے کہ تمباکو نوشی ہرسال 70 لاکھ افراد کی جان لے رہی ہے اور یہ شرح سال 2000 کے مقابلے میں اب دوگنا ہوچکی ہے۔ اقوامِ متحدہ کے ذیلی ادارے ڈبلیو ایچ او نے کہا ہے کہ اس صدی کے آخر تک ایک ارب افراد تمباکو نوشی کی بھینٹ چڑھ جائیں گے جو ایک خوفناک رحجان ہے۔

ڈبلیو ایچ او کی سربراہ مارگریٹ چین نے کہا ہے کہ تمباکو نوشی ایک خطرناک عادت ہے جو امراضِ قلب سے لے کر پھیپھڑوں کے سرطان کی وجہ بھی ہے اور اطراف کے تمام افراد کو یکساں طور پر متاثر کرتی ہے۔ ایک ماہ قبل طبی جریدے لینسٹ میں شائع ایک رپورٹ میں کہا گیا تھا کہ سال 2016 میں 64 لاکھ افراد ہلاک ہوئے تھے جبکہ 2030 تک ہلاکتوں میں تین گنا اضافہ ہوجائے گا۔

عالمی ادارہ صحت نے یہ بھی کہا ہے کہ تمباکو نوشی سے ہونے والے صحت کے نقصانات پر پوری دنیا کے لوگ ڈیڑھ ٹریلین ڈالر کے برابر رقم خرچ کررہے ہیں جو عالمی جی ڈی پی کا دو فیصد ہے. ماہرین صحت کے مطابق پاکستان میں تمباکو نوشی سے ہر سال ایک لاکھ افراد ہلاک ہوجاتے ہیں۔

اقوام متحدہ کے ادارہ برائے صحت کی رپورٹ کے مطابق پاکستان کا شمار ان ممالک میں ہوتا ہے جہاں تمباکو نوشی سے پیدا ہونے والی بیماریوں سے بڑی تعداد میں لوگ ہلاک ہوتے ہیں۔ ان بیماریوں میں دل کے امراض، فالج کا حملہ اور کینسر شامل ہیں۔  پاکستان دنیا کے ان 15 ممالک میں بھی شامل ہے جہاں تمباکو کی پیداوار اور استعمال سب سے زیادہ ہے۔

About VOM URDU

ایک تبصرہ

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

Read Next

ăn dặm kiểu NhậtResponsive WordPress Themenhà cấp 4 nông thônthời trang trẻ emgiày cao gótshop giày nữdownload wordpress pluginsmẫu biệt thự đẹpepichouseáo sơ mi nữhouse beautiful