جمہوری اسلامی میں آزادی کی حدود دستور اور ملک کا قانون ہے، رہبر انقلاب اسلامی

مشہد مقدس میں نئے ہجری شمسی سال کے آغاز کے موقع پر ملک بھر سے آئے ہوئے لاکھوں زائرین سے اپنے سالانہ خطاب میں رہبر انقلاب اسلامی آیت اللہ العظمی سید علی خامنہ ای نے فرمایا کہ میں یقین سے کہہ سکتا ہوں کہ آج ایران کی موجودہ آزادی اور خودمختاری دنیا کے کسی اور ملک میں نہیں ہے۔ آیت اللہ العظمی سید علی خامنہ ای فرمایا کہ ایران میں اسلامی جمہوری نظام قائم ہے جسے عوام نے سامراج اور آمرانہ نظام ختم کر کے قائم کیا ہے۔ رہبر انقلاب اسلامی نے فرمایا کہ ایران نے بیرونی دباؤ اور دیگر مسائل کے باوجود انصاف کی فراہمی میں قابل قدر خدمات انجام دی ہیں اور اس شعبے میں اچھی ترقی کی ہے۔ علاقے کی صورت حال کی جانب اشارہ کرتے ہوئے رہبر انقلاب اسلامی آیت اللہ العظمی سید علی خامنہ ای نے فرمایا کہ ایران نے خطے میں امریکہ کے منصوبوں کو خاک میں ملا دیا ہے۔ رہبر انقلاب اسلامی نے فرمایا کہ امریکہ کی سازش یہ تھی کہ داعش جیسے شرپسند، ظالم اور ہتاک دہشت گرد گروہ کو قائم کر کے علاقے کی

اقوام کی توجہ غاصب صہیونی حکومت کی جانب سے ہٹایا اور اندونی جھگڑوں میں الجھا دیا جائے لیکن ایران نے اس سازش کو ناکام بنا دیا۔

آیت اللہ العظمی سیدعلی خامنہ ای نے داعش کی سرکوبی میں امریکی کردار کے بارے میں واشنگٹن کے دعووں کو جھوٹ کا پلندہ قرار دیتے ہوئے فرمایا کہ امریکہ چاہتا تھا کہ داعش اور اس جیسے گروہ باقی رہیں لیکن اس کی مٹھی میں رہیں۔ رہبر انقلاب اسلامی نے خطے میں ایران کے کردار کی جانب اشارہ کرتے ہوئے فرمایا کہ ایران نے جوکچھ بھی کیا وہ علاقے کی قوموں اور حکومتوں کی درخواست اور خواہش کے مطابق کیا ہے اور ایران نے علاقے میں تکفیری دہشت گردی کی کمر توڑ کر رکھ دی ہے۔ آیت اللہ العظمی سید علی خامنہ ای نے فرمایا کہ ایران نے علاقے میں امن و استحکام کے قیام میں بنیادی کردار ادا کیا ہے۔ آپ نے فرمایا کہ ایران خطے کے ملکوں کے ساتھ جو تعاون بھی کیا ہے وہ جذباتی بنیادوں پر نہیں بلکہ پورے منطقی اور دانشمندانہ حساب و کتاب کے مطابق کیا ہے۔ ایران نے کسی ملک کے اندرونی معاملات میں مداخلت کا کوئی ارادہ نہیں رکھا ہے اور ایران کا کردار خطے کے ملکوں کی درخواست کے مطابق ہے۔

رہبر انقلاب اسلامی نے بڑے واضح الفاظ میں فرمایا کہ اس بات میں کوئی شک نہیں کہ خطے کے معاملات میں امریکہ اپنے مقاصد حاصل کرنے میں کبھی کامیاب نہیں ہو گا۔ رہبر انقلاب نے کہا کہ انقلاب کے اصل اقدار اور نعرے یہ ہیں کہ؛ استقلال، آزادی، جمہوریت، قوم پر اعتماد، انصاف اور ان سب سے بالاتر و برتر ملک میں احکام دین اور شریعت کا نفاذ۔ یہ شعار انقلاب کی ابتداء سے ہی لگائے گئے ہیں، آج ملک میں آزادی ہے، یہ انقلاب کے وقت عوام کا مطالبہ تھا، یعنی یہ دو سو سال سے جاری استعماری قوتوں کے تسلط کا ردعمل ہے۔ یہ بہت بہتر ہے کہ ہمارے اہل فکر اور اہل تحقیق نوجوان، جن پر انقلاب سے قبل دو سو سال تک استعماری قوتیں مسلط تھیں اور غیر اقوامیں ان پر حکومت کرتی تھیں، یعنی اس جیسا ملک بیرونی قوتوں کے زیر تسلط تھا، لہذا آزادی ایرانی قوم کا عمومی مطالبہ تھا۔ میں یہ کہہ سکتا ہوں کہ آج دنیا میں کوئی بھی ملک ایران جیسا آزاد نہیں، دنیا میں ہر ایک قوم کسی نہ کسی طرح عالمی طاقتوں کے زیر اثر ہے، وہ قوم جو کسی طرح سے بھی بیرونی طاقتوں کے زیر اثر نہیں، صرف ایران ہے۔

 

 

About وائس آف مسلم

Voice of Muslim is committed to provide news of all sort in muslim world.

ایک تبصرہ

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

Read Next

ăn dặm kiểu NhậtResponsive WordPress Themenhà cấp 4 nông thônthời trang trẻ emgiày cao gótshop giày nữdownload wordpress pluginsmẫu biệt thự đẹpepichouseáo sơ mi nữhouse beautiful