جی بی کے رواں مالی سال ترقیاتی بجٹ میں تقریباً ساڑھے چار ارب روپے وفاق کے پاس اب تک پڑے ہیں،راجہ جہانزیب

گلگت (خبر نگار خصوصی) ممبر گلگت بلتستان قانون ساز اسمبلی راجہ جہانزیب نے کہا ہے کہ گلگت بلتستان کا کل ترقیاتی بجٹ 14ارب 84کروڑ روپے ہے جبکہ 3 ارب 50 کروڑ روپے PSDP منصوبوں کے شامل ہیں۔ PSDP منصوبوں سے گلگت بلتستان حکومت کا کچھ لینا دینا نہیںہے صرف ان کی نگرانی وزیراعلیٰ کرتے ہیں ۔جی بی کے رواں مالی سال ترقیاتی بجٹ میں تقریباً ساڑھے چار ارب روپے وفاق کے پاس اب تک پڑے ہیں اگر وزیراعلیٰ نے اس حوالے سے کوتاہی برتی تو یہ رقم مالی سال کے اختتام تک نہیں مل سکے گی جس کی وجہ سے علاقے کو بھاری نقصان پڑے گا ۔ PSDPکے منصوبوں کی منظوری دینا کا اختیار وزارت امور کشمیر و جی بی کے پاس ہونے کی وجہ سے بروقت تکمیل نہیں ہورہی ہے صوبائی حکومت PSDPمنصوبوں کے منظوری کا اختیار فوری طور پر چیف سیکریٹری جی بی کو بحیثیت پرنسپل اکائونٹنگ آفیسر دلانے کے لئے اقدامات کریں تاکہ منصوبوں کی تکمیل میں تاخیر نہ ہوسکے ۔ کے پی این سے گفتگو کرتے ہوئے راجہ جہانزیب نے کہا کہ اب تک صوبائی اے ڈی پی کے پانچ ارب روپے جاری ہوئے ہیں تاہم چیف سیکریٹری گلگت بلتستان اور سیکریٹری پلاننگ کی توجہ اور بروقت اقدامات کی بدولت ساڑھے چھ ارب روپے خرچ ہوئے ہیں ۔ ڈیڑھ ارب روپے Bridge financingکی مد سے استعمال کئے گئے ہیں یہ ڈیڑھ ارب روپے آئندہ دنوں جاری ہونے والے ساڑھے تین ارب سے برابر کئے جائیںگے ۔ بجٹ سے اضافی رقم خر چ کرنا چیف سیکریٹری اور سیکریٹری پلاننگ کا اہم کارنامہ ہے جس پر انہیں خراج تحسین پیش کرتے ہیں ۔ انہوںنے کہا کہ ساڑھے تین ارب روپے جاری ہونے کے مراحل میں ہیں تاہم ساڑھے چار ارب سے زائد کی رقم جو کہ صوبائی اے ڈی پی کی ہے وفاق کے پاس پڑی ہے اگر وزیراعلیٰ اور حکومت نے فی الفور اقدامات نہیں کئے اور ریلیز کرنے کے لئے بروقت اقدامات نہیں کئے تو خدشہ ہے کہ یہ رقم مالی سال کے اختتام تک گلگت بلتستان کو نہیں مل سکے گی جس سے علاقے کا بھاری نقصان ہوگا ۔ انہوںنے کہا کہ گلگت بلتستان میں ترقیاتی منصوبوں کے راہ میں سب سے بڑی رکاوٹ اس وقت وزارت امور کشمیر ہے ۔وزارت امور کشمیر کی مداخلت اور بے جا رکاوٹوں کی وجہ سے اس وقت کئی اہم منصوبوں کھٹائی میں پڑے ہوئے ہیں ۔ صوبائی حکومت سے مطالبہ کرتے ہیں اور اس حوالے سے اسمبلی میں باقاعدہ قرارداد پیش کریںگے کہ PSDPکے منصوبوں کی منظوری کے اختیارات وزارت امور کشمیر سے اٹھاکر چیف سیکریٹری گلگت بلتستان کو دئے جائیں تاکہ منصوبے بروقت مکمل ہوسکے انہوںنے کہا کہ داریل تانگیر اور یاسین گوپس کے ضلع بننے کا نوٹیفکیشن مراحل میں ہے ۔ اور دونوں کو ساتھ ضلع بنانے کا اعلان کیا جائیگا تاہم اس میں تاخیر کی وجہ سے عوام میں بے چینی پھیل رہی ہے صوبائی حکومت جلد از جلد یاسین گوپس کے ضلع بنانے کا نوٹیفکیشن جاری کرکے عوام میں پھیلی بے چینی کو دور کریں اور عوام کا دیرینہ مسئلہ حل کریں۔

About وائس آف مسلم

Voice of Muslim is committed to provide news of all sort in muslim world.

ایک تبصرہ

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

Read Next

ăn dặm kiểu NhậtResponsive WordPress Themenhà cấp 4 nông thônthời trang trẻ emgiày cao gótshop giày nữdownload wordpress pluginsmẫu biệt thự đẹpepichouseáo sơ mi nữhouse beautiful