داریل کے عوام اپنی تباہی کا انتظار کریں،فورس کمانڈر کا انتہائی خطرناک بیان

فورس کمانڈر گلگت بلتستان میجر جنرل عاصم منیر نے کہا ہے کہ دیامر میں اغواء کئے گئے اسی سی او کے انجینئرز کو ہمارے حوالے کیا جائے ورنہ داریل تانگیر کے عوام اپنی تباہی کا انتظار کریں، اگر مغوی انجینئرز کو خراش تک آئی تو ہم داریل تانگیر کے پچھتر ہزار کی آبادی کو آئی ڈی پیز بنا دیں گے۔ میں داریل و تانگیر کے عوام و جرگہ سے کہتا ہوں کہ ایک ہفتے کے اندر مغوی انجینئرز کو حکومت کے حوالے کیا جائے ورنہ تکفیری دہشت گردوں اور سہولت کاروں کے گھروں کو مسمار کیا جائے گا۔ فورس کمانڈر گلگت بلتستان میجر جنرل عاصم منیر نے تانگیر کے علاقہ میں عمائدین و عوام اور اراکین جرگہ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ میں قرآن کی روشنی میں کہتا ہوں کہ تکفیری دہشت گردوں، ملک دشمن عناصر کو پناہ دینا گناہ ہے اور جرم ہے۔ آپ لوگ ایک طرف کہتے ہیں کہ ہم تکفیری دہشت گردوں کی مدد نہیں کرتے لیکن کیا آج تک کسی نے کسی تکفیری دہشت گرد کے حوالے سے حکومت کو آگاہ کیا ہے یا کسی نے آج تک ان ملک دشمن قاتل عناصر سے سماجی طور پر قطع تعلق کیا ہے؟ انہوں نے کہا کہ آپ کے پاس دو راستے ہیں ایک اچھائی کا جبکہ دوسرا راستہ برائی کا ہے، اب فیصلہ آپ نے کرنا ہے کہ اچھائی کا راستہ اختیار کرنا ہے یا برائی کے راستے کا انتخاب کر کے آئی ڈی پیز بننا ہے۔ فورس کمانڈر نے کہا کہ ہم نے تانگیر کی بیٹی کو جو گرفتار ہوئی تھی واپس لاکر آپ کے حوالے کیا ہے لیکن آپ لوگوں نے مغوی انجینئرز کو اب تک ہمارے حوالے نہیں کیا، کیا یہی احسان کا بدلہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے سوات میں مولوی فضل اللہ جیسے لوگوں کو ٹھیک کیا اور 8 لاکھ کے قریب لوگ آئی ڈی پیز بن گئے۔ داریل تانگیر کی آبادی تو قلیل ہے اس لئے آپ ٹھیک ہو جائیں

About وائس آف مسلم

Avatar
وائس آف مسلم ویب سائٹ کو ۵ لوگ چلاتے ہیں۔ اس سائٹ سے خبریں آپ استعمال کر سکتے ہیں۔ ہماری تمام خبریں، آرٹیکلز نیک نیتی کے ساتھ شائع کیئے جاتے ہیں۔ اگر پھر بھی قارئین کی دل آزاری ہو تو منتظمین معزرت خواہ ہیں۔۔

ایک تبصرہ

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.