سعودی تیل کی تنصیبات پر یمن فوج کا ڈرون حملہ

بحیرہ احمر کے ساحلی علاقے یَنبُع کے قریب سعودی عرب کی تیل کی تنصیبات پر ڈرون طیاروں نے حملہ کیا ہے۔

الجزیرہ ٹیلی ویژن کے مطابق سعودی عرب کے وزیر تیل خالد الفالح نے کہا ہے کہ یَنبُع سے الشرقیہ کے درمیان پائپ لائن کے ذریعے تیل کی سپلائی منقطع ہو گئی ہے۔
سعودی خبر رساں ایجنسی نے بھی ایک سیکورٹی ذریعے کے حوالے سے بتایا تھا کہ ریاض کے علاقے میں قائم ملک کی سب سے بڑی تیل کی تنصیبات کے دو پمپنگ اسٹیشنوں کو حملے کا نشانہ بنایا گیا ہے۔
سعودی وزیر تیل نے بھی اس خبر کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ پمپنگ اسٹیشنوں میں لگی آگ پر قابو پا لیا گیا۔
اس سے پہلے یمن کے المسیرہ ٹیلی ویژن نے اپنی ایک رپورٹ میں بتایا تھا کہ یمنی فوج کے سات ڈرون طیاروں نے سعودی عرب کے اندر تیل اور دیگر صنعتی تنصیبات کو حملوں کو نشانہ بنایا ہے۔

About یاور عباس

یاور عباس
یاور عباس صحافت کا طالب علم ہے آپ وائس آف مسلم منجمنٹ کا حصہ ہیں آپ کا تعلق گلگت بلتستان سے ہے اور جی بی کے مقامی اخبارات کے لئے کالم بھی لکھتے ہیں وہاں کے صورتحال پر گہری نظر رکھتے ہیں۔

ایک تبصرہ

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.