شام میں ترک فورسز کی کارروائی،امریکی سپیشل فورسز کا دستہ نشانہ بن گیا

انقرہ: شام میں ترک فورسز کی کارروائی سے درجنوں کرد جنگجو مارے گئے جبکہ امریکی سپیشل فورسز کا دستہ بھی نشانہ بن گیا۔ترکی کی جانب سے شام میں شروع کیے گئے آپریشن کے دوران 342 کرد جنگجو ہلاک ہو چکے ہیں۔

ترک فوج نے بدھ اور جمعرات کی درمیانی شب شام کے سرحدی علاقوں راس العین اور تل ابیض میں آپریشن شروع کیا تھا اور کردوں کے زیر تسلط علاقوں میں داخل ہوکر ترک فوج نے آپریشن کیا تھا۔جس میں اب تک 342 کرد جنگجو ہلاک ہو چکے ہیں جبکہ امریکی سپیشل فورسز کا دستہ بھی نشانہ بن گیا۔تاہم امریکی میڈیا نے دعویٰ کیا ہے کہ حملے میں کوئی جانی نقصان نہیں ہوا جبکہ دوسری جانب آپریشن کے دوران ترکی کا پہلا فوجی اہلکار مارا گیا ہے۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا کہ اگر ترکی نے شام میں کچھ ایسا کیا جو اسے نہیں کرنا چاہیے تو ایسی پابندیاں عائد کریں گے جس کا بہت ہی کم ممالک کو اندازہ ہے جبکہ ترکی کے صدر رجب طیب اردوان کا کہنا تھا کہ اگر سعودی عرب، مصر، یورپ سمیت دیگر ممالک کی طرف سے ترکی پر تنقید جاری رہی تو 36 لاکھ کے قریب مہاجرین کے لیے یورپ کے دروازے کھول دیئے جائیں گے۔

About وائس آف مسلم

Avatar
وائس آف مسلم ویب سائٹ کو ۵ لوگ چلاتے ہیں۔ اس سائٹ سے خبریں آپ استعمال کر سکتے ہیں۔ ہماری تمام خبریں، آرٹیکلز نیک نیتی کے ساتھ شائع کیئے جاتے ہیں۔ اگر پھر بھی قارئین کی دل آزاری ہو تو منتظمین معزرت خواہ ہیں۔۔