طالبہ سے زیادتی کیس کے دومجرموں کو سزائے موت اور 34.34سال قید کی سزا

  • گلگت : انسداد دہشت گردی کی عدالت نے بلتستان میں گینگ ریپ کے مشہور کیس کا فیصلہ سنادیا ہے واقعے میں ملوث دو مجرموں کو سزائے موت ‘ 34 سال قید اور 2 دو لاکھ روپے جرمانے کی سزا سنائی ہے ۔ انسداد دہشت گردی کورٹ کے جج راجہ شہباز خان نے34 صفحات پر مشتمل بلتستان میں گینگ ریپ کیس کا تفصیلی فیصلہ سناتے ہوئے ملزمان شکیل احمد ساکن الڈنگ سکرد و اور احمد حسین ساکن الڈنگ عباس ٹاؤن سکردو کو گواہوں او ر ثبوتوں کی بناء پر اے ٹی سی ایکٹ سیکشن 34 پی پی سی7 ای کے تحت سزائے موت دی ہے جبکہ ملزمان کو سیکشن 377 کے تحت 10 سال قید ‘ سیکشن 363 کے تحت 7 سال قید او ایک ایک لاکھ روپے جر مانہ ‘ سیکشن 392 پی پی سی 7 ایچ کے تحت 10 سا ل قید اور ایک ایک روپے جر مانہ اور سیکشن 506 پی پی سی 7 سی کے تحت 7 سال قید کی سزا سنائی ہے ملزمان کو یہ حق دیا گیا ہے و ہ اگلے 15 روز تک اس سزا کے خلاف اپیل کر سکتے ہیں واضح رہے کہ 4 ماہ قبل 7 مارچ 2015 ء کو سکردو میں ٹیوشن سے واپس اپنے گھر جانے والی فرسٹ ائیر کی طالبہ مسمات (ح)کو دو لڑکوں نے اغواء کیا تھا اور سابق وزیر اعلی کے گھر کے قریب سدپارہ میں اجتماعی کی تھی ۔جنسی زیادتی کا شکار ہونے والی لڑکی نے اس واقعے کے خلاف ویمن پولیس اسٹیشن سکردو میں رپورٹ درج کروائی تھی جس کے بعد پولیس نے ملزمان کو پکڑ کر تحقیقات کی اور منگل کے روز انسداد دہشت گردی کی عدالت نے ملزمان کو سزا سنائی ہے ۔ گلگت بلتستان میں اپنی نوعیت کے لحاظ سے اس پہلے کیس کا صرف 4 ماہ کی قلیل مدت میں فیصلہ سنایا گیا ہے

About وائس آف مسلم

Voice of Muslim is committed to provide news of all sort in muslim world.

ایک تبصرہ

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

Read Next

ăn dặm kiểu NhậtResponsive WordPress Themenhà cấp 4 nông thônthời trang trẻ emgiày cao gótshop giày nữdownload wordpress pluginsmẫu biệt thự đẹpepichouseáo sơ mi nữhouse beautiful