عراق: خواتین پر داعش کے وحشیانہ مظالم،نیوز رپورٹ

اسپوٹنک نیوز ایجنسی کے مطابق، داعش دہشت گردوں نے گذشتہ ایک مہینے کے دوران موصل شہر میں ڈیڑھ سو لڑکیوں اور خواتین اور سیکڑوں مردوں کو موت کے گھاٹ اتار دیا ہے۔ نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر موصل میں موجود ایک ذریعے نے بتایا ہے کہ داعش کے دہشت گرد عناصر خواتین پر مختلف الزامات عائد کر کے انہیں موت کی سزا سنا دیتے ہیں۔ موصل سے باہر رشتہ داروں سے موبائل فون کے ذریعے بات چیت کرنا، حکومتی اور سماجی اداروں کے ساتھ تعاون یا انسانی حقوق کے سلسلے کی سرگرمی جیسے بہانوں کے تحت خواتین کو قتل کیا جاتا ہے۔ رپورٹ کے مطابق، قتل کرنے سے پہلے ان لڑکیوں اور خواتین کو موصل شہر کی پرانی عمارتوں اور تہہ خانوں میں رکھا جاتا ہے۔ اس ذریعے نے بتایا ہے کہ مشرقی موصل کے کلیسا کی عمارت کے تہہ خانے کو بھی خواتین کی جیل کے طور پر استعمال کیا جا رہا ہے۔ اس شخص نے بتایا کہ موصل کی ایک سرکاری عمارت کے قریب تہہ خانوں سے قید میں رکھی گئی خواتین کے نالوں اور چیخوں کی آوازیں سنائی دیتی ہیں۔ اس باخبر ذریعے نے بتایا کہ داعش سے وابستہ تکفیری عناصر ان خواتین اور لڑکیوں کو قتل کرنے سے قبل ان کے ساتھ جنسی زیادت بھی کرتے ہیں۔ واضح رہے کہ داعش سے وابستہ دہشت گردوں نے جون دو ہزار چودہ میں موصل شہر پر قبضہ کیا تھا۔ ان تکفیری عناصر نے اب تک اس شہر کے عوام پر بےانتہا مظالم ڈھائے ہیں اور اس شہر کے ثقافتی اور تاریخی ورثے کو تباہ کر دیا ہے۔

About VOM

Voice of Muslim is committed to provide news of all sort in muslim world.

ایک تبصرہ

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

Read Next

ăn dặm kiểu NhậtResponsive WordPress Themenhà cấp 4 nông thônthời trang trẻ emgiày cao gótshop giày nữdownload wordpress pluginsmẫu biệt thự đẹpepichouseáo sơ mi nữhouse beautiful