عراق: داعش کے دہشت گردوں کو سنگین شکست کا سامنا

 


عراقی فوج نے ملک کے شمالی اور مغربی صوبوں ، صلاح الدین اور الانبار میں داعش کے خلاف اہم کامیابیاں حاصل کی ہیں -عراقی فوج کا کہنا ہےکہ اس نے صلاح الدین اورالانبار صوبوں میں اہم علاقوں کو داعش کے قبضے آزاد اور دہشت گردوں کو پیچھے ہٹنے پر مجبورکردیا ہے-عراقی فوج نے اعلان کیا ہے کہ اس نے اورعوامی رضاکار فورس نے لبیک یارسول اللہ دونامی کارروائیوں کو جاری رکھتے ہوئے صلاح الدین کے اہم شہر بیجی اور عراق کی سب سے بڑی آئل ریفائنری بیجی ریفائنری کو دہشت کردوں کےقبضے سے آزاد کرالیا ہے اور جلد ہی پورا صوبہ صلاح الدین دہشت گردوں کے قبضے سے آزاد ہونےوالا ہے -عراقی فوج کےبیان میں کہا گیا ہے کہ بیجی شہراور اس کے مضافاتی علاقوں کو دہشت گردوں کےقبضے سے آزاد کرانے کی کارروائیوں کے دوران عوامی رضاکارفورس خاص طورپر الجبور قبائل کے نوجوانوں نےاہم کردارادا کیا ہے -عراقی فوج کا کہنا ہےکہ صلاح الدین میں فوج اورعوامی رضاکاروں کی شاندار کامیابیوں کے بعد اب شمالی صوبے نینوا کی جانب پیشقدمی کا راستہ ہموار ہوگیا ہے –
واضح رہے کہ نینوا کے ہی صدرمقام موصل کو داعش نے اپنا مرکز بنا رکھا ہے -خبروں میں بتایا گیاہے کہ اتواراور پیر کی درمیانی رات صوبہ صلاح الدین میں دہشت گردوں کے ٹھکانوں پر فوج اور عوامی رضاکارفورس کے حملوں کےدوران جنھیں عراقی فضائیہ کی بھی حمایت حاصل تھی سیکڑوں دہشت گرد عناصر ہلاک اور زخمی ہوگئے ہیں –
ایک طرف جہاں صلاح الدین میں دہشت گردوں کے خلاف عراقی فورس کو مسلسل کامیابیاں مل رہی ہیں وہیں ساتھ ہی مغربی صوبے الانبار کا صدر مقام الرمادی بھی جس پر دہشت گردوں نے قبضہ کرلیا ہے اب عراقی فوج اور عوامی فورس کے محاصرے میں آگیا ہے -جبکہ رمادی کے بہت سے مضافاتی علاقے دہشت گردوں سے واپس لے لئے گئے ہیں -دہشت گردی کے خلاف آپریشنل کمان کے نائب سربراہ عبدالامیرالخزرجی نے کہا کہ صوبہ الانبار کو دہشت گردوں سے پاک کرنے اور اس صوبے کے علاقوں کو دہشت گردوں سے آزاد کرانے کے لئے فوجی آپریشن جاری ہےجس میں عوامی رضاکارفورس بھی شامل ہے -اس سلسلے میں عراقی وزیرخارجہ ا براہیم جعفری نے صلاح الدین اورالانبار صوبوں کو دہشت گردوں کے قبضے سے آزاد کرانے کی کارروائیوں میں عراقی فوج کی صفوں میں غیر ملکی فوجیوں کی شمولیت کےبارےمیں بعض ذرائع ابلاغ خاص طور پر عرب ذرائع ابلاغ کے دعوؤں کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملک کے مختلف علاقوں کو دہشت گردوں کے وجود سے پاک کرنے کی کارروائیاں صرف عراقی فوج اور عوامی رضآکار فورس ہی انجام دے رہی ہے-عراقی وزیرخارجہ نے داعش کے خلاف جنگ میں کرد پیشمرگہ ملیشیا اورعوامی فورس کے کردار کو انتہائی اہم قراردیتے ہوئے کہا کہ ان گروہوں نے دہشت گردوں کےخلاف بہت اہم کامیابیاں حاصل کی ہیں -لیکن بعض ذرائع ابلاغ ان کارروائیوں میں دیگر ملکوں کے فوجیوں کی شرکت کی خبریں پھیلا کرعراقی فوج اور عوامی فورس کی کامیابی کو کم اہمیت بناکر پیش کرنے کی کوشش کررہے ہیں -دہشت گردوں کے خلاف عراقی فورس کی کامیابیوں کے دوران بغداد کے گورنرعلی التمیمی نے بغدادصوبے کی اعلی سیکورٹی کمیٹی کے عہدیداروں کے ساتھ ایک اجلاس کرکے محرم کے دوران خاص سیکورٹی تدابیر اپنائی جانے کا اعلان کیا ہے -بغداد کے گورنر کا کہنا تھا کہ پندرہ ہزار سے زائد سیکورٹی اہلکاروں کو کربلائے معلی جانےوالے راستوں پرتعینات کیا گیا ہے جبکہ دارالحکومت بغداد کے بھی حساس علاقوں میں سیکورٹی کے انتہائی سخت انتظامات کئے گئے ہیں -واضح رہے کہ محرم کے دوران زیارت خاص طورپر نو اور دس محرم کربلائے معلی میں کرنے کے لئے عراق اور دنیا کے دیگر ملکوں سے لاکھوں زائرین کربلا پہنچتے ہیں –

About VOM

Voice of Muslim is committed to provide news of all sort in muslim world.

ایک تبصرہ

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

Read Next

ăn dặm kiểu NhậtResponsive WordPress Themenhà cấp 4 nông thônthời trang trẻ emgiày cao gótshop giày nữdownload wordpress pluginsmẫu biệt thự đẹpepichouseáo sơ mi nữhouse beautiful