عرب شہری نے بہادری کی نئی مثال قائم کر دی؟ اپنی اور بیٹی کی جان قربان کر کے درجنوں جانیں بچا لیں

بیروت(مانیٹرنگ ڈیسک) جس دن فرانس میں خون کی ہولی کھیلی گئی عین اسی دن لبنان کے دارالحکومت بیروت میں بھی ویسی ہی دہشت گردی کی کارروائیاں ہوئیں جہاں دو خودکش دھماکے ہوئے اور 45افراد لقمہ¿ اجل بن گئے۔ مگر عالمی میڈیا نے اپنی تمام ترتوجہ پیرس پر مرکوز رکھی اور بیروت کے سانحے کو یکسر نظرانداز کر دیا۔ یہاں ہم آپ کو بیروت میں ہونے والے ان دھماکوں کے بارے میں نہیں بتانا چاہتے بلکہ ان دھماکوں میں ایک شخص نے کمال بہادری کی جو داستان رقم کی وہ آپ کو سنانا چاہتے ہیں۔اس شخص نے خود اپنی اور اپنی ننھی بیٹی کی جان قربان کرکے سینکڑوں شہریوں کو دہشت گردی کا نشانہ بننے سے بچا لیا۔
اس شخص کا نام عدیل طرموس تھا۔ عدیل اپنی ننھی بیٹی کے ہمراہ اس مصروف مارکیٹ میں موجود تھا جہاں یہ دھماکے ہوئے۔ جب مارکیٹ میں پہلا دھماکہ ہوا تو عدیل دھماکے کی آواز سن کر اس طرف دوڑا۔ وہاں لوگوں کی لاشیں تڑپ رہیں تھیں۔ ایسے میں عدیل نے دیکھا کہ دوسرا خودکش حملہ آور دھماکہ کرنے کے لیے مارکیٹ کے اندر جمع ہونے والے ہجوم کی طرف بڑھ رہا تھا۔ عدیل نے اسے دبوچ لیا جس پر حملہ آور نے وہیں دھماکہ کر دیا جس کے نتیجے میں عدیل اور اس کی ننھی بیٹی شہید ہو گئے مگر عدیل کے اس اقدام کے باعث درجنوں شہریوں کی جانیں بچ گئیں۔آج پورا لبنان عدیل کی بہادری کی داد دے رہا ہے۔ واضح رہے کہ ان حملوں کی ذمہ داری بھی داعش نے قبول کی تھی۔

About VOM

Voice of Muslim is committed to provide news of all sort in muslim world.

ایک تبصرہ

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

Read Next

ăn dặm kiểu NhậtResponsive WordPress Themenhà cấp 4 nông thônthời trang trẻ emgiày cao gótshop giày nữdownload wordpress pluginsmẫu biệt thự đẹpepichouseáo sơ mi nữhouse beautiful