فلسطینی اسیران کے خلاف اسرائیلی کارروائیاں قابل مذمت ہیں

جنیوا ( نیوز ڈیسک ) اقوام متحدہ کے ہائی کمیشن برائے انسانی حقوق نے فلسطینی اسیران کے خلاف اسرائیلی ریاست کی وحشیانہ کارروائیوں کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ صہیونی ریاست بھوک ہڑتال کرنے والے اسیران کے مطالبات سننے کے بجائے انہیں مزید ہراساں کررہی ہے۔ خبر رساں ادارے “وائس آف مسلم” کی رپورٹ کے مطابق اقوام متحدہ کے ہائی کمیشن برائے انسانی حقوق’’زید بن رعد الحسین‘‘ نے جنیوا میں اپنے  ایک بیان میں کہا کہ اسرائیلی جیلوں میں اپنے جائز حقوق کے حصول کے لیے بھوک ہڑتال کرنےوالے اسیران کے خلاف اسرائیل کی اختیار کردہ پالیسیاں قابل مذمت ہیں۔

انہوں نے کہا کہ  اسرائیل کو بھوک ہڑتالی اسیران کی زندگیاں بچانے کے لیے ان سے فوری اور غیر مشروط مذاکرات کرنے چاہئے۔ یو این اہلکار نے کہا کہ اسرائیلی جیلوں میں بھوک ہڑتالی اسیران کے بارے میں ملنے والی اطلاعات اور رپورٹس انتہائی تشویشناک ہیں اور اسرائیلی انتظامیہ بھوک ہڑتالی قیدیوں کےساتھ انتقامی حربے استعمال کرکے مزید متنازع ہوگئی ہے۔

رعد الحسین نے اسرائیل سے مطالبہ کیا کہ وہ اسیران کے وکلاء کو ان سے ملنے کی اجازت فراہم کرے تاکہ اسیران کی حقیقی صورت حال سامنے لائی جاسکے۔

واضح  رہے کہ اسرائیلی جیلوں میں 17 اپریل سے 1500 فلسطینی اجتماعی بھوک ہڑتال جاری رکھے ہوئے ہیں۔

 

About VOM URDU

ایک تبصرہ

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.