قطری امیر سعودی عرب کے دورہ پر

خلیجی ملکوں کے درمیان دو برس قبل پیدا ہونے والی کشیدگی کے بعد گزشتہ روز قطری امیر شیخ تمیم بن حمد الثانی پہلی مرتبہ سعودی عرب کے دورے پر پہنچے ہیں۔

قطر ایئر ویز نے اس دورے کے بارے میں ٹویٹر پر نہایت دلچسپ تبصرہ کیا، قطر ایئرویز کا طیارہ خلیجی بحران اور قطر پر پابندیوں کے بعد پہلی مرتبہ جدہ ایئرپورٹ پر لینڈ کر رہا ہے۔

واضح رہے کہ جون 2017 میں سعودی عرب کی سربراہی میں متحدہ عرب امارات، بحرین اور مصر سمیت چند دیگر عرب ملکوں نے قطر سے سفارتی تعلقات مکمل طور پر ختم کر لیے تھے اور قطری شہریوں کے اپنے ملکوں میں داخل ہونے پر بھی پابندی عائد کر دی تھی۔

سعودی عرب اور اس کے اتحادیوں کی جانب سے قطر پر الزام عائد کیا گیا تھا کہ وہ دہشت گردوں کی مالی معاونت کرنے کے علاوہ خطے میں عدم استحکام کے لیے بھی کوشاں ہے جس کے لیے اس نے ایران کے ساتھ تعلقات قائم کر رکھے ہیں تاہم قطر نے ان تمام الزامات کی تردید کی تھی اور کہا تھا کہ خلیجی ممالک قطر کی خارجہ سوچ میں تبدیلی لانے کی کوشش کر رہے ہیں۔

Qatar-1-300x169

گزشتہ ہفتے سعودی عرب نے خطے کی صورت حال کے حوالے سے منعقدہ اجلاس میں قطر کو بھی شریک ہونے کی دعوت دی جس میں ایران اور امریکہ کے درمیان بڑھتی ہوئی کشیدگی کے تناظر میں خطے کی صورت حال پر تبادلہ خیال کیا جائے گا۔

قطر کو حال ہی میں مبینہ طور پر حوثی قبائل کی جانب سے ہونے والے حملوں کے بعد یہ دعوت دی گئی ہے جن میں پراسرار حالات میں مشرق وسطیٰ کے ساحلی علاقوں پر کھڑے متعدد ٹینکرز کے علاوہ سعودی عرب کی تیل پائپ لائن پر بھی ڈرون حملہ کیا گیا۔

About VOM

وائس آف مسلم ویب سائٹ کو ۵ لوگ چلاتے ہیں۔ اس سائٹ سے خبریں آپ استعمال کر سکتے ہیں۔ ہماری تمام خبریں، آرٹیکلز نیک نیتی کے ساتھ شائع کیئے جاتے ہیں۔ اگر پھر بھی قارئین کی دل آزاری ہو تو منتظمین معزرت خواہ ہیں۔۔