لاہور ہائیکورٹ نے حکومت کو ایم ڈبلیو ایم کے کارکنوں کو ہراساں کرنے سے روک دیا

لاہور ہائی کورٹ نے وفاقی وصوبائی حکومتوں اور انتظامیہ کو مجلس وحدت مسلمین کے کارکنوں کو سیاسی انتقام کا نشانہ بنانے سے روک دیا،

مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری سیاسیات سید ناصر شیرازی کی جانب سے رٹ پٹیشن پر ہائی کورٹ نے اپنے حکم نامہ میں کہا کہ مجلس وحدت مسلمین ایک پرامن سیاسی مذہبی جماعت ہے، اس کے کارکنان کو ہر طرح کی سیاسی، مذہبی آزادی حاصل ہے۔ مجلس وحدت مسلمین کی جانب سے سید ناصر عباس شیرازی اور فدا حسین رانا ایڈووکیٹ پیش ہوئے۔  وکلا نے اپنے دلائل میں کہا کہ مجلس وحدت مسلمین کو کالعدم جماعت ظاہر کر کے کارکنوں کو ہراساں کیا جا رہا ہے، ایم ڈبلیو ایم رجسٹرڈ سیاسی جماعت ہے، عدالت متعلقہ اداروں کو ہمارے کارکنوں کو ہراساں کرنے سے روکے۔ جسٹس محمد قاسم خان نے اپنے ریمارکس میں وفاقی، صوبائی حکومت اور دیگر اداروں کو مجلس وحدت مسلمین کے کارکنوں کو ہراساں کرنے سے روک دیا۔

لاہور ہائی کورٹ میں رٹ پٹیشن کے سماعت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سید ناصر شیرازی کا کہنا تھا کہ پنجاب حکومت کی جانب سے چینوٹ، جھنگ، بھکر اور سرگودہا میں مجلس وحدت مسلمین کے پرامن اور محب وطن کارکنان کو صوبائی حکومت کی ایماء پر ضلعی انتظامیہ انتقامی کارروائیوں کا نشانہ بنا رہی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ اگر کوئی بھی صوبائی و ضلعی انتظامیہ مجلس وحدت مسلمین کو کالعدم یا کالعدم جماعتوں سے روابط کا الزام لگائے گا تو اسے اب توہین عدالت کا سامنا کرنا پڑے گا۔ مجلس وحدت مسلمین ایک ملک گیر قومی سیاسی جماعت ہے، ہم نے ہمیشہ ہر ظالم اور ملک دشمن عناصر کے خلاف آواز بلند کی اور کسی بھی جابر اور آمر کے سامنے جھکنے سے انکار کیا، ہمیں اسی جرم کی پاداش میں پابند سلاسل کیا جا رہا ہے، ہم مسلم لیگ ن کے ایسے اوچھے ہتھکنڈوں سے مرعوب نہیں ہونگے بلکہ پہلے سے مضبوط ارادوں کے ساتھ میدان میں حاضر رہیں گے۔ سید ناصر شیرازی کا کہنا تھا کہ مجلس وحدت مسلمین کے پولیٹیکل و لیگل ونگ نے اس عزم کا اظہار کیا ہے کہ حکمرانوں کے ایسے مظالم کیخلاف قانونی، سیاسی، عدالتی اور عوامی محاذوں پر اپنے کارکنان اور مفادات کا دفاع جاری رکھیں گے، گلگت میں ہمارے صوبائی رہنما عارف قنبری کی رہائی اسی سلسلے کی ایک کڑی ہے

About وائس آف مسلم

Voice of Muslim is committed to provide news of all sort in muslim world.

ایک تبصرہ

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.