لشکر طیبہ اور حماس میں کوئی فرق نہیں، اسرائیلی وزارت خارجہ

تل ابیب ( نیوز ڈیسک ) اسرائیل کی وزارت خارجہ کے ڈپٹی ڈائریکٹر جنرل مارک سوفر نے نریندر مودی کے دورے کے موقع پر کہا کہ بھارت کو حق حاصل ہے کہ وہ دہشت گردی سے خود کو محفوظ رکھے۔ مارک سوفر کا کہنا تھا کہ بھارت اوراسرائیل ایک ہی طرح کے دشمن سے پریشان ہیں، اور ان کا دشمن مشترک ہے۔ اسرائیلی وزارت خارجہ کے ڈپٹی ڈائریکٹر نے کہا کہ ’لشکر طیبہ‘ اور’حماس‘ میں کوئی فرق نہیں، انہوں نے واضح کیا کہ ’دہشت گرد، دہشت گرد ہی ہوتا ہے۔ اپنے بیان میں اسرائیلی وزارت خٰارجہ کے عہدیدار نے بھارت کی کھلم کھلا حمایت کی، اور کہا کہ نئی دہلی کو حق حاصل ہے کہ وہ خود کو دہشت گردی سے محفوظ رکھنے کے اقدامات کرے۔ خیال رہے کہ اسرائیلی وزارت خارجہ کے ڈپٹی ڈائریکٹر جرنل مارک سوفر بھارت میں بطور اسرائیلی سفیر خدمات سر انجام دے چکے ہیں۔ خبر رساں ادارے ’اے پی‘ نے بتایا کہ سرد جنگ کے دوران بھارت نے اسرائیل کے ساتھ روابط بڑھانے سے گریز کیا، کیوں کہ اس وقت فلسطینیوں کی حمایت زوروں پر تھی۔ لیکن سرد جنگ کے اختتام کے فوری بعد دونوں ممالک نے سفارتی تعلقات قائم کیے۔

About VOM URDU

ایک تبصرہ

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.