تازہ ترین

متحدہ اپوزیشن نے گلگت بلتستان کیلئے مجوزہ پیکج مسترد کر دیا، اجتماعی استعفوں کی دھمکی

۔ گلگت بلتستان آرڈر 2018ء کیخلاف قانون ساز اسمبلی میں متحدہ اپوزیشن نے گھڑی باغ میں احتجاجی جلسہ منعقدہ کیا اور مجودہ پیکج کو مسترد کرتے ہوئے حکومت کا تختہ الٹنے، تحریک عدم اعتماد اور اجتماعی استعفوں کی دھمکی دیدی۔ جلسے سے خطاب کرتے ہوئے قائد حزب اختلاف کیپٹن (ر) محمد شفیع خان نے کہا کہ وزیراعظم جسے بنانے میں ہمارا کوئی کردار نہیں، اسے گلگت بلتستان کا بادشاہ بنا دیا گیا اور جی بی میں ٹیکس نافذ کرنے کا اختیار وزیراعظم کو دیا جا رہا ہے، اگر اس آرڈر کو گلگت بلتستان میں نافذ کیا گیا تو ہم ایف سی آر اور مہاراجہ کے دور سے بھی پیچھے چلے جائینگے، اس لئے ہم اس آرڈر کو نافذ ہونے سے روکنے کیلئے حکومت کا تختہ الٹنے، تحریک عدم اعتماد اور قانون ساز اسمبلی سے اجتماعی طور پر مستعفی ہونے سمیت ہر آپشن استعمال کرینگے۔ انہوں نے کہا کہ مجوزہ گلگت بلتستان آرڈر 2018ء کی سفارشات کا مسودہ میرے پاس موجود ہے، اس آرڈر کے آرٹیکل 61 کے تحت وزیراعلٰی کے انتظامی اختیارات وزیراعظم کو منتقل کر دیئے گئے ہیں، آرٹیکل 64 کے تحت وفاقی حکومت جب چاہیے، جہاں چاہیے گلگت بلتستان میں زمین حاصل کرسکتی ہے، جبکہ وزیراعظم کو یہ اختیار بھی دیا گیا ہے کہ وہ گلگت بلتستان میں کسی بھی وقت ٹیکسوں کو نافذ کرسکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مجوزہ سفارشات میں وزیراعظم کو گلگت بلتستان کا بادشاہ بنا دیا گیا ہے، ایک ایسے شخص کو گلگت بلتستان میں قانون سازی کے اختیارات دیئے گئے ہیں، جسے آئین پاکستان میں بھی قانون سازی کے اختیارات حاصل نہیں ہیں، کیا وزیراعظم دیگر صوبوں میں بھی قانون سازی کرتا ہے۔

About A. H

ایک تبصرہ

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

Read Next

ăn dặm kiểu NhậtResponsive WordPress Themenhà cấp 4 nông thônthời trang trẻ emgiày cao gótshop giày nữdownload wordpress pluginsmẫu biệt thự đẹpepichouseáo sơ mi nữhouse beautiful