مستقبل کی جنگ میں حزب اللہ سے مقابلہ آسان نہیں : سربراہ اسرائیلی خفیہ ایجنسی

تل ابیب (مانیٹرنگ ڈیسک) صیہونی حکومت کی خفیہ ایجنسی کے سربراہ نے ایران کے مقابلے میں سعودی عرب کے ساتھ مشترکہ مفاد کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ مستقبل کی جنگ میں حزب اللہ سے مقابلہ معمولی بات نہیں ہے۔ہرتزی ہالیوی نے سالانہ پریس کانفرنس میں علاقے کے مختلف مسائل پر گفتگو کی۔ ان کا کہنا تھا کہ 2011 میں ہونے والی تبدیلیوں کے نتیجے میں یہ حکومت پہلے سے زیادہ پر امن اور طاقتور ہوئی ہے لیکن ان کے مطابق یہ موضوع تشویش کا باعث بھی ہے۔ اسرائیل ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق ہرتزی ہالیوی نے حزب اللہ لبنان اور صیہونی حکومت سے ان کے مقابلے کی جانب بھی اشارہ کیا۔ ان کا یہ خیال ہے کہ حزب اللہ لبنان کے پاس ایک لاکھ سے زیادہ میزائل اور راکٹ ہیں اور ایسے اسلحہ جاتی نظام ہے جو ان کے پاس اس سے پہلے نہیں تھا۔ انہوں نے دعوی کیا کہ 1973 کی عربوں کے ساتھ اسرائیل کی جنگ میں اسرائیل کے اندر صرف آدمی میزائل کے حملے میں ہلاک ہوا لیکن مستقبل کی جھڑپوں میں معاملہ الگ ہی ہوگا۔ صیہونی حکومت کے اس اعلی عہدیدار نے حزب اللہ کےبارے میں دعوی کیا کہ دنیا میں حزب کے بارے میں ہم کو جتنی معلومات ہے اتنی معلومات دنیا میں کسی بھی فوج کے پاس نہیں ہے لیکن مستقبل کی جنگ آسان اور سادہ نہیں ہوگی۔انہوں نے شام کی جنگ میں ہونے والے جان نقصان کے بارے میں دعوی کیا کہ شام کی جنگ میں ایران کی سپاہ پاسداران انقلاب اسلامی کے 250 فوجی مارے گئے۔ اس میں وہ مسلح افراد شامل نہیں ہیں جن کو ایران نے ٹریننگ دی ہے۔ صیہونی حکومت کی خفیہ ایجنسی کے سربراہ نے کہا کہ ایران، حزب اللہ، حماس اور جہاد اسلامی کے 60 فیصد بجٹ کو پورا کرتا ہے۔

About وائس آف مسلم

Voice of Muslim is committed to provide news of all sort in muslim world.

ایک تبصرہ

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

Read Next

ăn dặm kiểu NhậtResponsive WordPress Themenhà cấp 4 nông thônthời trang trẻ emgiày cao gótshop giày nữdownload wordpress pluginsmẫu biệt thự đẹpepichouseáo sơ mi nữhouse beautiful