مقبوضہ کشمیر: مظلوم کشمیری نے جام شہادت نوش کرلیا

سری نگر: قابض بھارتی افواج نے بدترین ریاستی دہشت گردی کا مظاہرہ کرتے ہوئے مقبوضہ وادی چنار کے ضلع اسلام آباد میں ایک اور بے گناہ نہتے کشمیری نوجوان کو شہید کردیا۔

بھارتی افواج نے نوجوان کشمیری کو شہید کرنے کے لیے اپنا پرانا روایتی حربہ استعمال کیا۔ کشمیر میڈیا سروس کے مطابق بے گناہ کشمیری نوجوان کو اس وقت شہید کیا گیا جب سیکیورٹی کے نام پر قابض افواج علاقے میں آپریشن کررہی تھیں۔

مقبوضہ وادی سے موصولہ اطلاعات کے مطابق بے گناہ نوجوان کی شہادت کے بعد بھی پورے ضلع میں بدترین ریاستی آپریشن جاری ہے جس پر علاقے میں سخت احتجاج بھی کیا جارہا ہے۔

مقبوضہ وادی کشمیرمیں قابض بھارتی افواج نے ریاستی دہشت گردی کا مظاہرہ کرتے ہوئے گزشتہ روز بھی چار بہتے بے گناہ نوجوانوں کو شہید کردیا تھا۔

کشمیر میڈیا سروس کے مطابق قابض بھارتی افواج نے گزشتہ روز دعویٰ کیا تھا کہ شہید نوجوان عسکریت پسند تھے اوران کا تعلق جیش محمد سے تھا۔

کشمیر میڈیا سروس کے مطابق قابض بھارتی افواج نے مظلوم کشمیریوں پرڈھائے جانے والے مظالم سے دنیا کو بے خبر رکھنے کے لیے اپنا روایتی ہتھکنڈا استعمال کرتے ہوئے علاقے میں جاری آپریشن اور گھر گھر تلاشی کے دوران انٹرنیٹ اور موبائل سروسز مکمل طور پر بند کردی ہیں تاکہ وادی سے باہر کے افراد حقیقی صورتحال سے آگاہ نہ ہو سکیں۔

بھارتی افواج کے ہاتھوں جام شہادت نوش کرنے والے افراد کے نماز جنازہ میں لوگوں کی بڑی تعدا د نے شرکت کی تھی۔ اس موقع پرنوجوانوں کی جانب سے نعرے بازی بھی کی گئی تھی۔

About VOM

وائس آف مسلم ویب سائٹ کو ۵ لوگ چلاتے ہیں۔ اس سائٹ سے خبریں آپ استعمال کر سکتے ہیں۔ ہماری تمام خبریں، آرٹیکلز نیک نیتی کے ساتھ شائع کیئے جاتے ہیں۔ اگر پھر بھی قارئین کی دل آزاری ہو تو منتظمین معزرت خواہ ہیں۔۔