وزیر اعلی گلگت بلتستان حفیظ الرحمن سے اپنی ہی کابینہ کے وزیر نے گلگت بلتستان چھوڑنے کا مطالبہ کردیا

اسلام آباد :کشمیری ہونے پر فخر وزیر اعلی گلگت بلتستان کو مہنگا پڑ گیا، ان کی اپنی ہی حکومت کے وزیر نے ان سے گلگت بلتستان چھوڑنے کا مطالبہ کردیا ۔ وزیر تعلیم گلگت بلتستان ابراہیم ثنائی نے کہا ہے کہ گلگت بلتستان کو کشمیر کا حصہ کہنے والے احمقوں کی دنیا میں رہتے. ہم نہ کشمیر کا حصہ ہیں نہ کسی کے انڈر رہے ہیں. اور نہ ہی پاکستان سے الحاق کا کوئی ثبوت ہے. جو بھی یہ کہتا ہے کہ گلگت بلتستان کشمیر کا حصہ ہے میں انکو چیلنج کرتا ہوں کہ وہ آئے اور مجھ سے ڈیبیٹ کریں. اور اگر اس حوالے سے کس کے پاس کوئی ثبوت ہے تو لائیں. کراچی معاہدہ جس میں پاکستان اور کشمیر میں ہوا اسمیں گلگت بلتستان کی کوئی نمائندگی تک نہیں اور گلگت بلتستان کے ساتھ ڈبل گیم کھیلی جا رہی ہے. ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ وزیر اعلٰی نے کشمیری ہونے پر فخر کر کے بہت غلط کیا ہے. اگر وہ سچ میں اپنے آپ کو کشمیری کہتے ہیں تو گلگت بلتستان چھوڑ کر چلے جائیں. اور انکو گلگت بلتستان میں رہنے کا کوئی حق نہیں۔ ورنہ ایسی بات ان کے منہ سے نکلنا لمحہ فکریہ ہے۔ وزیر اعلٰی کو گلگت بلتستان والوں نے گلگت کا فرزند سمجھ کر منتخب کیا ہے نہ کہ کشمیری سمجھ کر یہ بات انہیں سمجھنی چاہیے. وزیر تعلیم کا کہنا تھا میں گلگت بلتستان کا باسی ہوں اور اسی مٹی پر دفن ہونگا چاہیے میرے سو ٹکڑے بھی کیوں نہ کئے جائیں. مجھ پر اس مٹی کا قرض ہے. میں کشمیریوں سے گزارش کرتا ہوں وہ تاریخ پڑھیں تب انکو پتہ چلے گا کہ کشمیر اور گلگت بلتستان کا دور دور تک کوئی لینا دینا نہیں ہے مگر پھر بھی ہم مسلمان ہونے کے ناطے اپنے حقوق سے محروم ہونے کے باوجود انکو سپورٹ کرتے ہیں. تو ان کو بھی یہ سب سمجھنا چاہیے.

About VOM

Voice of Muslim is committed to provide news of all sort in muslim world.

ایک تبصرہ

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

Read Next

ăn dặm kiểu NhậtResponsive WordPress Themenhà cấp 4 nông thônthời trang trẻ emgiày cao gótshop giày nữdownload wordpress pluginsmẫu biệt thự đẹpepichouseáo sơ mi nữhouse beautiful