پاکستان سے طالبان سمیت تمام دہشتگردوں کے نیٹ ورکس کا خاتمہ کردیا گیا ہے، نفیس زکریہ

اسلام آباد ( نیوز ڈیسک ) ترجمان دفترخارجہ نفیس زکریا نے اسلام آباد میں ہفتہ وار نیوز بریفنگ کے دوران میڈیا کے نمائندوں کو بتایا ہے کہ پاکستان سے طالبان اور دہشت گردی کے دیگر تمام نیٹ ورکس کا خاتمہ کردیا گیا ہے، کالعدم حقانی گروپ افغانستان سے چلایا جا رہا ہے۔ ہفتہ وار بریفنگ میں ترجمان دفترخارجہ نفیس زکریا کا کہنا تھا کہ مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیاں کی جا رہی ہیں، کئی کشمیری نوجوانوں کی مسخ شدہ لاشیں ملی ہیں جو ناقابل شناخت ہیں، حریت رہنماؤں کو نماز عید کی ادائیگی سے بھی روک دیا گیا جبکہ مقبوضہ کشمیر میں مظلوم کشمیریوں کی حق خودارادیت کی جدوجہد کو روکنے کے لئے کیمیائی ہتھاروں کا بھی استعمال کیا جا رہا ہے جس کی تحقیقات ہونی چاہئیں، پاکستان ان تمام مظالم کی شدید الفاظ میں مذمت کرتا ہے۔ پوری امت مسلمہ کو مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں پر تشویش ہے جبکہ او آئی سی کے سیکرٹری جنرل نے بھی مقبوضہ کشمیر میں ہونے والے مظالم کی مذمت کی ہے، امریکا کی جانب سے کشمیری رہنماؤں کو دہشت گرد قرار دینا بلاجواز ہے۔

نفیس زکریا نے کہا کہ پاکستان میں عیدالفطر سانحہ پارا چنار، کوئٹہ اور احمدپور شرقیہ جیسے واقعات کی وجہ سے ملے جلے جذبات کے ساتھ منائی گئی تاہم پاکستان سے دہشت گردی کے تمام نیٹ ورکس کا خاتمہ کردیا گیا ہے جبکہ چند بچے کچھے دہشت گرد بھی ملک سے فرار ہو گئے ہیں، امریکی سینیٹرز نے بھی دورہ پاکستان میں پاکستان کی انسداد دہشت گردی کی کاوشوں کو سراہا۔ کالعدم حقانی نیٹ ورک اب پاکستان میں موجود نہیں بلکہ افغانستان سے چلایا جا رہا ہے، افغانستان میں حقانی نیٹ ورک کے متعدد رہنماؤں کا مارا جانا ہمارے مؤقف کی تائید کرتا ہے۔

About VOM URDU

ایک تبصرہ

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.