پاکستان کا مفاد کیا تھا ، بھارتی پائلٹ کو کیوں رہا کیا ،وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے جواب دے دیا

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ ہم نے بھارتی پائلٹ کو پاکستان کے مفاد میں رہا کیا، او آئی سی میں نہ جانا پارلیمنٹ کا مشترکہ فیصلہ تھا جس پر میں نے سر تسلیم خم کیا۔ان کا کہنا تھا کہ نیشنل ایکشن پلان پر عمل درآمد نہ ہونے کا سوال بلاول اپنے نئے اتحادی سے پوچھیں ۔قومی اسمبلی میں خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ او آئی سی کے دوران متحدہ عرب امارات کے وزیر خارجہ سے رابطے میں تھا، کشمیر کے معاملے پر او آئی سی میں سخت الفاظ میں قرار داد پاس کی گئی۔
وزیراعظم عمران خان کو نوبل امن انعام کا حقدار قرار دینے کی مخالفت پر وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ جس طرح اپوزیشن نشستوں پر بیٹھے افراد اپنے لیڈرز سے عقیدت رکھتے ہیں، اسی طرح بہت سے لوگ عمران سے عقیدت رکھتے ہیں، اگر کسی نے کہہ دیا کہ انہیں نوبل انعام مل جائے تو کوئی گناہ کی بات نہیں بلکہ بڑائی اس میں ہے کہ عمران خان نے خود کہہ دیا کہ وہ نوبل انعام کے حقدار نہیں، نوبل انعام تو اسے ملنا چاہیے جو مسئلہ کشمیر حل کرے۔ شاہ محمود قریشی نے چیئرمین پی پی کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ نیشنل ایکشن پلان پر عمل درآمد نہ ہونے کا سوال بلاول اپنے نئے اتحادی سے پوچھیں، پاکستان ایف اے ٹی ایف کی گرے لسٹ میں تب ڈالا گیا جب آپ کے نئے اتحادی کی حکومت تھی۔ان کا کہنا ہے کہ معیشت کی خرابی پر بلاول کا سوال بالکل ٹھیک ہے لیکن کیا یہ خرابی چھ ماہ میں ہوئی؟ یہ پچھلے 40 سال کی بیماریاں ہیں جس کا ہم مقابلہ کر رہے ہیں ۔یہ قوم کے اکٹھے کھڑے ہونے کا وقت ہے، یقینی طور پر حسن صدیقی قومی ہیرو ہیں، ونگ کمانڈر نعمان علی خان کو بھی نہ بھولیں جنہوں نے دوسرا جہاز گرایا۔انہوں نے کہا کہ ہم نے بھارتی پائلٹ کو پاکستان کے مفاد میں رہا کیا، ہمارا پیغام واضح تھا جسے دنیا بھر میں سراہا گیا اور سب نے تسلیم کیا کہ پاکستان نے ذمہ داری کا مظاہرہ کیا۔

About وائس آف مسلم

Voice of Muslim is committed to provide news of all sort in muslim world.

ایک تبصرہ

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

Read Next

ăn dặm kiểu NhậtResponsive WordPress Themenhà cấp 4 nông thônthời trang trẻ emgiày cao gótshop giày nữdownload wordpress pluginsmẫu biệt thự đẹpepichouseáo sơ mi nữhouse beautiful