چاند دیکھنے پر کتنے لاکھ خرچ آتا ہے ؟فواد چوہدری ایک مرتبہ پھر میدان میں آ گئے

اسلام آباد :وفاقی وزیر سائنس و ٹیکنالوجی فواد چوہدری رویت ہلال کمیٹی کے چیئر مین مفتی منیب الرحمان کے بیان پر ایک مرتبہ پھر سے میدان میں آ گئے ہیں اور کہاہے کہ عید اور رمضان کا چاند دیکھنے پر 40 لاکھ رخرچ کرنا کہاں کی عقلمندی ہے ، کم از کم چاند دیکھنے کا معاوضہ نہیں ہونا چاہیے ۔

تفصیلات کے مطابق فواد چوہدری کا کہناتھا کہ پوری دنیا میں ایسے معاملات رضاکارانہ طور پر ہوتے ہیں جبکہ میں نے رائے دی تھی کسی کا متفق ہونا ضروری نہیں ہے ، عید اور رمضان کے چاند پر 40 لاکھ روپے خرچ کرنا کہاں کی عقلمندی ہے ، کم از کم چاند دیکھنے کا تو معاوضہ نہیں ہونا چاہیے ،رویت ہلال کمیٹی کے ممبران چاند تو رضا کارانہ دیکھ لیا کریں ، چاند دیکھنے کیلئے بھاری رقم خرچ ہو رہی ہے جبکہ علماءکرام بھی میری تجویز کی حمایت کر رہے ہیں ، چاند دیکھنے کیلئے سائنسی تکنیک سے فائدہ اٹھانا چاہیے ، 10 سال کا کیلنڈر بن جائے تو غیر ضروری اخراجات سے بچ جائیں گے۔

یاد رہے کہ اس سے قبل فواد چوہدری نے بیان جاری کرتے ہوئے کہا تھا کہ رویت ہلال کمیٹی کے پاس محدود ذرائع ہیں، ہلال آنکھ سے دیکھنا ضروری ہے تو پھردوربین کا استعمال کیوں کیا جاتاہے ؟ رویت کیلئے پھر سپارکو ٹیم کی موجودگی کیوں ضروری ہے ؟ ان کا کہناتھا کہ علما کو چاند کااعلان کرنے کی ضرورت نہیں ہے ،حکومت کو خودچاند نظر آنے کااعلان کرنا چاہئے ، اصل مسئلہ یہ ہے کہ ہم پاکستان کو آگے لیکر جاناچاہتے ہیں،ہم ایک پرانا پاکستان چاہتے ہیں یا ایک جدید پاکستان چاہتے ہیں۔

فواد چوہدری کے  بیان پر رویت ہلال کمیٹی کے چیئرمین مفتی منیب الرحمان میدان میں آئے اور انہوں نے کہا کہ فواد چودھری پاکستان کی تاریخ کومسخ نہ کریں ، وزیر اعظم عمران خان وزراءکو ہدایت کریں کے وہ تاریخ کومسخ نہ کریں، فواد چودھری نظام سے لاعلم ہیں ، دینی معاملات پر باتوں میں باتوں سے پرہیز کرنا چاہئے۔مفتی منیب الرحمان نے کہا کہ فواد چودھری چاہیں تو ان کوسوسال کا کلینڈر بھی بنادیں گے ، وہ جلسہ بھی کرلیں۔ ان کا کہنا تھا کہ فواد چودھری کو پتہ ہوناچاہئے کہ رویت ہلال کمیٹی کا اجلاس محکمہ موسمیات میں ہوتاہے ،ان کا کہنا تھا کہ کبھی بھی ایسا نہیں ہوتا کہ کھلے آسمان میں چاند نظر نہ آتا ہو۔فواد چودھری کا علماءاورکچھ لوگوں پر کمیٹی بنانے کا اعلان غلط ہے ، علما تحریک پاکستان میںپیش پیش رہے ہیں، فواد چودھری فرض منصبی ادا کریں ، تاریخ مسخ نہ کریں۔

گزشتہ روز مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ پر ٹویٹ کرتے ہوئے وفاقی وزیر سائنس و ٹیکنالوجی فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ رویت ہلال کے لیے 5 رکنی کمیٹی قائم کردی گئی ہے، جس میں سپارکو، محکمہ موسمیات اور ٹیکنالوجی ماہرین شامل ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کمیٹی آئندہ 10 قمری سالوں کا کلینڈرجاری کرے گی، جس میں عیدین، محرم، رمضان سمیت تمام مہینوں کا کلینڈر جاری ہوگا، اس اقدام سے ہر سال رویت ہلال پرپیدا ہونے والا تنازع ختم ہوگا۔

About وائس آف مسلم

Avatar
وائس آف مسلم ویب سائٹ کو ۵ لوگ چلاتے ہیں۔ اس سائٹ سے خبریں آپ استعمال کر سکتے ہیں۔ ہماری تمام خبریں، آرٹیکلز نیک نیتی کے ساتھ شائع کیئے جاتے ہیں۔ اگر پھر بھی قارئین کی دل آزاری ہو تو منتظمین معزرت خواہ ہیں۔۔

ایک تبصرہ

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.