چیف سیکرٹری کا ہنزہ اور نگر کا دورہ، چھپروٹ میں منعقدہ صاف و سرسبز پاکستان تقریب میں مہمان خصوصی کے طور پر شرکت

ہنزہ (اجلال حسین/ اسٹاف رپوٹر) چیف سیکرٹری گلگت بلتستان کا ضلع ہنزہ اور نگر کا دورہ، سرکاری اداروں کی کارکردگی اور ترقیاتی سکیموں کا جائزہ لیا۔ گلگت 14 اکتوبر 2018: چیف سیکرٹری گلگت بلتستان، بابر حیات تارڑ، نے بروز ہفتہ و اتوار ضلع ہنزہ اور ضلع نگر کا سرکاری دورہ کیا۔ اپنے سرکاری دورے میں جناب چیف سیکرٹری نے مفاد عامہ میں سرکاری افسران اور اداروں کی کارکردگی کو جانچنے اور عوام الناس کے مسائل کے فوری اور دیرپا حل کے لئے معززین علاقہ کے ساتھ ساتھ مقامی افراد کے ساتھ ملاقاتیں کیں تاکہ سرکاری محکمہ جات کی کارکردگی کے ساتھ عوامی مسائل اور ان کے تدارک کے لئے بھی مفید آرا مرتب کی جاسکیں۔ نیز دونوں اضلاع میں جاری ترقیاتی سکیموں کا بھی جائزہ لیا۔ جناب چیف سیکرٹری نے دونوں اضلاع کے ڈپٹی کمشنرز کو تمام تر ترقیاتی سکیموں کو اپنی نگرانی میں بروقت اور سرکاری معیار کے عین مطابق مکمل کروانے کی ہدایات جاری کیں۔ چیف سیکرٹری گلگت بلتستان نے نئی نسل میں ماحولیاتی آلودگی کے تدارک اور جسمانی صفائی کا شعور اجاگر کرنے کے لیے چھپروٹ مڈل اسکول میں منعقدہ صاف و سرسبز پاکستان نامی تقریب میں مہمان خصوصی کے طور پر شرکت کی، جس میں بچوں اور نوجوانوں کو اپنے علاقے اور ملک کو سرسبز و شاداب رکھنے کے ساتھ ساتھ اپنی جسمانی طہارت کا بھی سبق دیا گیا۔ اس موقع پر چیف سیکرٹری نے شاہراہ قراقرم سے چھپروٹ تک میٹل روڈ اور چھپروٹ ویلی میں گرلز کالج بنانے کی یقین دہانی کروائی، تقریب کے بعد بابر حیات نے خوبصورت سیاحتی مقام گپہ ویلی کا دورہ کیا اور سیاحوں کو درپیش مسائل کو جلد حل کرنے کی یقین دہانی کروائی۔  چیف سیکریٹری گلگت بلتستان بابر حیات تارڈ نے مسگرقلندرچی 3میگاوٹ پاور پروجیکٹ ، ششکٹ محکمہ زراعت کی نرسری میں گرین پاکستان شجر کاری مہم کا افتتاح جبکہ بھی کیاجس کے بعد سوست میں زیر تعمیر 25بیڈ RHC ہسپتال کا معائینہ کرنے کے بعد دو روزہ دورے کے بعد گلگت روانہ ہو ا اس موقع پر سنٹر اور بالائی ہنزہ میں علاقے کے عمائدین اور مختلف اداروں کے نمائندوں سے ملاقات بھی کی۔ انہوں نے کہا کہ بہت جلد بالائی ہنزہ گوجا ل سب ڈویثرن اور شناکی تحصیل کا نوٹیفکشن جاری کر دیا جائے گا۔ چونکہ اس کے لئے جو بھی درکار قانونی تقاضے تھے مکمل ہو چکے ہیں انہوں نے ہنزہ مین بجلی کی بڑھتی ہوئی بدترین لوڈ شیڈنگ پر بات کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں احساس ہے کہ ہنزہ میں بجلی کی شدید قلت ہے ہنگامی بنیادوں ایک اضافی تھرمل جنریٹر کا بندوبست کیا ہے ہنزہ میں منصب کر دیا جائے گاجبکہ صوبائی انتظامیہ کی کوششوں کی وجہ سے عطاآباد پاور 32.2میگاواٹ منصوبے منسوخ ہونے کا خطرہ تھا برقرار رکھا گیا ہے چونکہ ملک کے بہت سے علاقوں میں منطوری نہیں دی تھی ان کو منسوخ کر دیئے گئے ہیںانہوں نے مسگر پاور پروجیکٹ کے معائینے کے بعد محکمہ برقیات ہنزہ کے حکام کو سختی سے احکامات جاری کرتے ہوئے نومبر کے اخر تک تین میگاواٹ بجلی کی ترسیل کو یقینی بنانے کی ہدایات دی۔

بشکریہ روزنامہ کے ٹو

About یاور عباس

ایک تبصرہ

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

Read Next

ăn dặm kiểu NhậtResponsive WordPress Themenhà cấp 4 nông thônthời trang trẻ emgiày cao gótshop giày nữdownload wordpress pluginsmẫu biệt thự đẹpepichouseáo sơ mi nữhouse beautiful