کوہ پیما ثمینہ بیگ کے بھائی مرزا علی نے دنیا کی بلند ترین چوٹی ماﺅنٹ ایورسٹ سر کرلی

ہنزہ : گلگت بلتستانی کوہ پیما مرزا علی نے ماﺅنٹ ایورسٹ سر کرلیا، مرزا علی ماﺅنٹ ایورسٹ کو سر کرنے والی گلگت بلتستانی کی پہلی خاتون کوہ پیما ثمینہ بیگ کے بھائی ہیں۔

تفصیلات کے مطابق ہنزہ کے علاقے شمشال سےتعلق رکھنے والے  کوہ پیما مرزا علی نے دنیا کی سب سے بلند ترین چوٹی ‘ماؤنٹ ایورسٹ’ سر کرلی، مرزا علی نے رات 2 بجے دنیا کی بلند ترین چوٹی سر کی۔

الپائن کلب پاکستان کے سیکریٹری کرار حیدرری کےمطابق کوہ پیما مرزا علی نے بدھ کی رات 2 بجے ماﺅنٹ ایورسٹ کی انتہائی بلندی پر قدم رکھ کر اپنی مہم جوئی مکمل کی۔

وہ ماﺅنٹ ایورسٹ کو سر کرنے والی گلگت بلتستان کی  پہلی خاتون کوہ پیما ثمینہ بیگ کے بھائی ہیں، مرزا علی 2013 میں مہم جوئی کےدوران اپنی بہن کی ٹیم میں شامل تھے، لیکن کیمپ 4 سے ہی واپس ہوگئے تھے۔

اس سے قبل نذیر صابر،حسن سدپارہ اور ثمینہ بیگ ماؤنٹ ایورسٹ سر کرچکے ہیں، نذیر صابر نے 2000 میں دنیا کی بلند ترین چوٹی ماؤنٹ ایورسٹ کے فاتحین میں اپنا نام شامل کرایا تھا۔ وہ گلگت بلتستان کے پہلے کوہ پیما بنے تھے جس نے یہ کارنامہ انجام دیا ہو۔

اس کے بعد حسن سدپارہ نے 2011 اور ثمینہ بیک نے 2013 میں ایورسٹ کی بلندترین چوٹی سر کی تھی۔

واضح رہے کہ ماؤنٹ ایورسٹ نیپال میں واقع دنیا کی سب سے بلند ترین چوٹی ہے جس کی اونچائی 8 ہزار 848 میٹر ہے۔

About یاور عباس

یاور عباس صحافت کا طالب علم ہے آپ وائس آف مسلم منجمنٹ کا حصہ ہیں آپ کا تعلق گلگت بلتستان سے ہے اور جی بی کے مقامی اخبارات کے لئے کالم بھی لکھتے ہیں وہاں کے صورتحال پر گہری نظر رکھتے ہیں۔