گلگت بلتستان کونسل کا خاتمہ وفاقی حکومت کا احسن اقدام ہے، جے یو آئی

گلگت: جمیعت اسلامی گلگت بلتستان کے مرکزی رہنماء نے کہا ہے کہ جی بی کونسل کا خاتمہ وفاقی حکومت کا احسن اقدام ہے۔ کونسل منتخب عوامی نمائندوں اور وفاقی حکومت کے درمیان رابطے میں بڑی رکاوٹ تھی۔ گلگت بلتستان کو عبوری آئینی صوبہ بنایا جائے۔ کشمیر طرز کا سیٹ اپ کسی صورت قبول نہیں۔ مبصر کے طور پر سینٹ اور قومی اسمبلی میں نمائندگی جی بی عوام کے ساتھ زیادتی ہوگی۔ ان خیالات کا اظہار جمعیت علمائے اسلام کے مرکزی رہنماء و سابق پارلیمانی لیڈر قانون ساز اسمبلی جی بی حاجی رحمت خالق نے میڈیا سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ نون کی وفاقی اور صوبائی حکومتوں نے جی بی کے لئے ڈھائی سالوں میں سوائے اس ایک کام کے کوئی اچھا کام نہیں۔ جی بی کونسل وفاقی اور صوبائی حکومت کے درمیان رابطے میں بڑی رکاوٹ تھی، دیگر چاروں صوبوں میں کونسل کا کوئی وجود نہیں تو جی بی اسمبلی میں کونسل کا وجود کوئی معنی نہیں رکھتا۔ انہوں نے کہا کہ مسئلہ کشمیر کی وجہ سے گلگت بلتستان کو مکمل آئینی صوبہ نہیں بنایا جاسکتا، اس لیے جی بی کو عبوری آئینی صوبہ بناکر قومی اسمبلی اور سینٹ میں نمائندگی دیکر جی بی کے عوام کا دیرینہ مطالبہ پورا کیا جائے۔

About وائس آف مسلم

Voice of Muslim is committed to provide news of all sort in muslim world.

ایک تبصرہ

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.