یوم مظلومین جہاں، گلگت بلتستان بھر میں گزشتہ 72سالوں سے جاری مظالم کے خلاف مظاہرے

ملک بھر کی طرح گلگت بلتستان  میں بھی جمعة الوداع کو یوم مظلومین جہاں کے طور پر منایا گیا مختلف شہروں میں نماز جمعہ کے بعد احتجاجی ریلیاں نکالی گئی اور گلگت بلتستان کے عوام گزشتہ 72 سالوں سے جاری مظالم پر علماء کرام اور نوجوانوں نے روشنی ڈالی، اس موقع پر مظاہرین نے ہاتھوں میں پلے کارڈز اٹھا رکھا تھا جن پر مختلف نعرے اور مطالبات درج تھے۔

یاد رہیں کہ  پہلی بار گلگت بلتستان میں یوم القدس کے موقع پر فسلطین کے ساتھ ساتھ جی بی میں ہونے والے مظالم کے خلاف بھی آواز اٹھایا جا رہا جس پر سوشل میڈیا صارفین اس عمل کو شعوری بیداری سمجھتے ہیں

ایک صارف روشن دین لکھتے ہیں “گلگت بلتستان کے عوام گزشتہ 7 دہای سے غلامی کے دلدل میں پیس رہا ہے۔ وہاں کے حکمران عیاش اور عوام لاشعوری کے اخری درجہ پہ جو ہمیشہ دوسروں کے معملات میں مداخلت کرتے ہیں۔”

About VOM

وائس آف مسلم ویب سائٹ کو ۵ لوگ چلاتے ہیں۔ اس سائٹ سے خبریں آپ استعمال کر سکتے ہیں۔ ہماری تمام خبریں، آرٹیکلز نیک نیتی کے ساتھ شائع کیئے جاتے ہیں۔ اگر پھر بھی قارئین کی دل آزاری ہو تو منتظمین معزرت خواہ ہیں۔۔