یہ تمام نااہل افراد تنخواہ اور مراعات بھی واپس کریں‘‘ چیف جسٹس نے حکم دیدیا

اسلام آباد( آن لائن )چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے دہری شہریت کے باعث مراعات واپسی سے متعلق کیس میں محموداخترکی دوران سماعت بولنے کی کوشش پرچیف جسٹس نے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے ریمارکس دیتے ہوئے کہا ہے کہ وہ زمانہ گیاجب آپ کاطوطی بولتاتھا۔سپریم کورٹ نے دہری شہریت پرنااہل ارکان کے خلاف فوجداری مقدمات ختم کرنے اوران کو تمام تنخواہیں ،مراعات واپس کرنے کا حکم دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ آ ف پاکستان میں دہری شہریت کے باعث مراعات واپسی سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی ۔کیس کی سماعت چیف جسٹس کی سربراہی میں کی گئی ۔دوران سماعت جسٹس اعجازالاحسن نے کہا کہ ریکوری کی قسطیں کرسکتے ہیں،مکمل ختم نہیں کرسکتے۔انہوں نے کہا کہ پارلیمنٹ خدمت کی جگہ ہے،پیسے بنانے کی نہیں۔جسٹس اعجازالاحسن کا کہنا تھا کہ دہری شہریت والے کیس میں کوئی رکن اسمبلی غریب نہیں۔

دوران سماعت محموداخترکی بولنے کی کوشش پرچیف جسٹس برہم ہو گئے۔چیف جسٹس نے محموداخترنقوی کو بولنے سے روکتے ہوئے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ وہ زمانہ گیاجب آپ کاطوطی بولتاتھا،بلاوجہ اور بغیراجازت بولنے کی کوشش نہ کریں۔ چیف جسٹس نے کہا کہ دہری شہریت والوں سے 5 لاکھ کی ریکوری کرلیتے ہیں۔

عدالت نے دہری شہریت پرنااہل ارکان کے خلاف فوجداری مقدمات ختم کرنے کے ساتھ ساتھ انکو تمام تنخواہیں اور مراعات واپس کرنے کا حکم دے دیا۔عدالت نے دہری شہریت والوں سے 5 لاکھ فی کس 6ماہ کی قسطوں کی صورت میں ریکوری کرنے کا حکم صادر کر دیا۔

About یاور عباس

ایک تبصرہ

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

Read Next

ăn dặm kiểu NhậtResponsive WordPress Themenhà cấp 4 nông thônthời trang trẻ emgiày cao gótshop giày nữdownload wordpress pluginsmẫu biệt thự đẹpepichouseáo sơ mi nữhouse beautiful