شام میں فوج سے جھڑپوں میں 100شدت پسند ہلاک

دمشق / بغداد / واشنگٹن / لندن: شامی فوج نے حلب شہر پرشدت پسندوں کا بڑا حملہ پسپا کردیا جبکہ جھڑپوں میں 100 شدت پسندوں ہلاک ہوگئے، اتحادی فوج کی بمباری میں داعش کا اہم کمانڈر طارق بن طاہر بھی مارا گیا۔ ذرائع ابلاغ کے مطابق شام میں شدت پسندوں کی جانب سے ملک کے جنوب میں واقع شہر حلب پر قبضے کے لیے کیے جانے والے ایک بڑے حملے کے بعد شامی افواج نےشدت پسندوں کے ٹھکانوں پر فضائی بمباری کی ہے۔

جمعرات کو شدت پسندوں نے شہر میں حکومت کے زیرِقبضہ علاقوں پر کئی سو راکٹ داغے۔ لڑائی میں100 سے زائد شدت پسندوں مارے گئے ہیں۔ شہر کے کچھ علاقے حکومت کے زیر انتظام ہیں جبکہ کچھ علاقوں پرشدت پسند قابض ہیں۔ قدیم حلب شہر کا 60 فیصد علاقہ تباہ ہو چکا ہے۔ شدت پسندوں نے اعلان کیا ہے کہ وہ  2 حصوں میں تقسیم اس شہر کو آزاد کرانا چاہتے ہیں۔ اس کارروائی میں انھیں القاعدہ اور اس کی حامی النصرہ فرنٹ کے شدت پسندوں کا تعاون بھی حاصل ہے۔ اقوام متحدہ کے ادارے یونیسکو نے اس شہر کو عالمی ثقافتی ورثہ قرار دے رکھا ہے۔

دریں اثناء شام میں اتحادی فوج کی بمباری کے نتیجے میں داعش کا اہم کمانڈر طارق بن طاہر ہلاک ہو گیا۔ امریکی محمکہ دفاع پینٹاگون نے طارق بن طاہر کی ہلاکت کی تصدیق کردی ہے۔ طارق بن طاہر داعش کیلیے فنڈنگ اور بھرتیوں کی نگرانی کرتا تھا۔ امریکی وزارت دفاع کے مطابق طارق بن طاہر کے سر کی قیمت 30 لاکھ ڈالر مقرر تھی۔ طارق ہن طاہر کا بھائی بھی 15 جون کوعراق میں ایک حملے میں ہلاک ہو گیا تھا۔

About وائس آف مسلم

Voice of Muslim is committed to provide news of all sort in muslim world.

ایک تبصرہ

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

Read Next

ăn dặm kiểu NhậtResponsive WordPress Themenhà cấp 4 nông thônthời trang trẻ emgiày cao gótshop giày nữdownload wordpress pluginsmẫu biệt thự đẹpepichouseáo sơ mi nữhouse beautiful